Official Web

سٹاک مارکیٹ میں تیزی کی واپسی، انڈیکس 72.08 پوائنٹس بڑھ گیا

لاہور:  پاکستان سٹاک مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کے چوتھے روز کے دوران تیزی کی دو روز کے بعد واپسی ہو گئی۔ حصص مارکیٹ کا 100 انڈیکس 72.08 پوائنٹس بڑھ گیا جس کے بعد ایک مرتبہ پھر 43 ہزار کی نفسیاتی حد بحال ہو گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سٹاک مارکیٹ میں رواں ہفتہ غیر یقینی صورتحال کی زد میں آیا ہے، کاروباری ہفتے کے پہلے روز کے دوران انڈیکس میں بڑی تیزی دیکھنے میں آئی تاہم اختتام 11 پوائنٹس کی بڑھوتری کیساتھ ہوا۔ دوسرے کاروباری روز کے دوران 11 پوائنٹس کی گراوٹ دیکھی گئی جبکہ گزشتہ روز (تیسرے کاروباری روز) کے دوران 214.01 پوائنٹس کی مندی کے بعد 42993.03 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ کر بند ہوا تھا۔

آج کاروبار کا آغاز ہی غیر یقینی صورتحال کے باعث ہوا، پہلے ایک گھنٹے کے دوران ٹریڈنگ میں مندی کے آثار نظر آئے اور انڈیکس 42855.26 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا تھا، اگلے دو گھنٹوں میں انویسٹرز ایک بار متحرک ہوئے اور حصص مارکیٹ کی 43 ہزار کی نفسیاتی حد بحال ہو گئی تھی۔

تیزی کا تسلسل اگلے کچھ گھنٹوں تک چلتا رہا ہے اور 100 انڈیکس 43205.26 پوائنٹس کی سطح پر بھی دیکھا گیا۔ تاہم غیر یقینی صورتحال نے ایک مرتبہ پھر انٹری ڈالی جس کے باعث ٹریڈنگ کے دوران 100 انڈیکس 42805.73 پوائنٹس کی سطح پر بھی دیکھا گیا تھا۔

کاروبار کے اختتام پر پاکستان سٹاک مارکیٹ میں 100 انڈیکس 72.08 پوائنٹس کا اضافہ دیکھا گیا جس کے بعد 43 ہزار کی نفسیاتی حد بحال ہوئی اور انڈیکس 43065.10 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا۔

آج پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں 0.17 فیصد بہتری دیکھی گئی جبکہ 15 کروڑ 21 لاکھ 32 ہزار 40 پوائنٹس کے شیئرز کا لین دین ہوا۔ اس لین دین کے باعث مارکیٹ میں 5 ارب 38 کروڑ 15 لاکھ 75 ہزار 386 روپے کا کاروبار ہوا۔

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ ملک میں چھائی غیر یقینی سیاسی (اتحادیوں مسلم لیگ ق، ایم کیو ایم، جی ڈی اے کی حکومت سے تحفظات) صورتحال نے انویسٹرز کے ہاتھ روکے ہوئے ہیں جس کے باعث سرمایہ کار دیکھو اور انتظار کرو کی پالیسی کو ترجیح دیتے ہوئے ہیں۔

Comments
Loading...