Official Web

آزادکشمیر میں برفانی تودوں کی زد میں آکر 62 افراد جاں بحق، متعدد لاپتہ

مظفر آباد: آزادکشمیر میں شدید برفباری کے دوران برفانی تودے گرنے سے 55 افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی جبکہ متعدد لاپتہ ہوگئے۔

آزادکشمیر میں جاری بارشوں اور برفباری کے باعث جاں بحق افراد کی تعداد 55 ہو گئی ہے۔ وادی نیلم کے ایک ہی گاؤں سرگن بگوالی میں 19 افراد برفانی تودہ میں دب کر جاں بحق ہوئے۔

نیلم اور لیپا سمیت بالائی علاقوں میں ٹیلی فون اور بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا۔ مختلف اضلاع کی رابطہ سڑکیں بھی برف باری کے باعث بند ہیں اور عوام گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔
وزیر مملکت ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی احمد رضا قادری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ آزادکشمیر میں بارش اور برفباری سے 55 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں، وادی نیلم میں جاں بحق 49 افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں، پاک فوج کے ہیلی کاپٹر زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر رہے ہیں، برف تلے دب جانیوالے افراد کی تلاش کیلئے بھی ریسکیو آپریشن جاری ہے، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے ضلعی آفیسر اختر ایوب نے بتایا کہ وادی نیلم میں تاحال 10 افراد برفانی تودے تلے دبے ہیں جن کی تلاش جاری ہے، پونچھ اور سندھوتی میں بھی ایک ایک شخص جاں بحق ہوا ہے۔

Due to heavy snowing several disastrous incidents happend in #NeelumValley. Round about 18 casualties have been confirmed. Due to communication cut off from #Gracevalley the total number of casualties is not yet confirmed. May Allah bless the valley with his mercy. pic.twitter.com/woNy07K35x

— Ahtazaz Rasheed Mughal (@AhtazazEdgy) January 13, 2020

قدرتی آفات سے نمٹنے والے ادارے نیشنل ڈیزاسٹر مینیجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) نے ملک بھر میں برفباری و بارشوں سے ہونے والے مالی نقصانات کی تفصیلات جاری کردی جس کے مطابق ملک بھر میں برفباری و بارشوں سے اب تک 70 افراد جاں بحق ہوئے جن میں سب سے زیادہ ہلاکتیں آزاد کشمیر میں ہوئیں جہاں 55 جبکہ بلوچستان میں 15 افراد جاں بحق اور 11 زخمی ہوئے۔

شیئر

Comments
Loading...