Official Web

چند کرکٹرز فٹنس ٹیسٹ کا مطلوبہ معیار حاصل نہیں کر سکے: مصباح الحق

قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق کا کہنا ہے چند کرکٹرز فٹنس ٹیسٹ کا مطلوبہ معیار حاصل نہیں کر سکے۔

مصباح الحق کا فٹنس ٹیسٹ کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پہلے فٹنس کا معیار کھلاڑیوں کی اسٹرینتھ کو دیکھ کر تیار کیا جاتا تھا لیکن اس بار ہم نے دنیائے کرکٹ کی 4 بہترین ٹیموں کے فٹنس معیار کو پیش نظر رکھا۔

انہوں نے کہا کہ قومی کرکٹرز کے فٹنس ٹیسٹ اب 4 ماہ بعد نہیں بلکہ ہر 2 ماہ بعد ہوں گے، کھلاڑیوں کے لیے فٹنس ٹیسٹ کا مطلوبہ معیار بھی بڑھا دیا ہے۔

اب فٹنس ٹیسٹ پاس نہ کرنے والے کرکٹرز پر جرمانہ عائد ہو گا

قومی کرکٹرز کے حالیہ فٹنس ٹیسٹ کے حوالے سے بات کرتے ہوئے مصباح الحق نے کہا کہ حالیہ نتائج میں چند کرکٹرز فٹنس ٹیسٹ کا مطلوبہ معیار حاصل نہیں کر سکے تاہم موجودہ معیارحاصل نہ کرنے والے کھلاڑیوں کی فٹنس گزشتہ معیار سے بہتر ہے۔

ٹیسٹ کرکٹ کو 4 روز تک محدود کرنے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے قومی ٹیم کے ہڈ کوچ کا کہنا تھا ٹیسٹ کرکٹ کو پانچ روز تک برقرار رکھنے کا حامی ہوں، چار روزہ ٹیسٹ کرکٹ سے کھیل میں دلچپسی ختم ہو جائے گی۔

مصباح الحق نے کہا کہ چار روزہ کرکٹ میں بولرز کے ان فٹ اور تھکنے کے امکانات بڑھنے کی امید ہے۔

Comments
Loading...