Official Web

اسرائیل کو مغربی کنارے کے کچھ حصے ضم کرنے کا حق ہے، امریکہ

قبوضہ بیت المقدس:  ٹرمپ انتظامیہ کی مسلم دشمنی عروج پر پہنچ گئی، امریکی سفیر نے کہا ہے کہ اسرائیل کو مغربی کنارے کے کچھ حصے ضم کرنے کا حق ہے، امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کو انٹرویو میں ڈیوڈ فریڈمین نے کہا ہے کہ دنیا اردن اور اسرائیل کے درمیان ناکام فلسطینی ریاست کی حمایت نہیں کرے گی۔

ٹرمپ انتظامیہ کی ایک اور مسلمان دشمن چال، امریکی سفیر ڈیوڈ فرڈ مین نے نیویارک ٹائمز کو انٹرویو میں کہا ہے کہ اسرائیل کو حق ہے کہ وہ غربِ اردن کے کچھ حصوں کو ضم کر لے۔ اگرچہ ایسی کاروائی بین الاقوامی قانون کے تحت غیر قانونی ہو گی۔

امریکی سفیر نے کہا دنیا اردن اور اسرائیل کےدرمیان ناکام فلسطینی ریاست کی حمایت نہیں کرے گی۔ اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کے مطابق غربِ اردن کا علاقہ ایک مقبوضہ خطہ ہے اور اس پر تعمیر ہونے والی یہودی بستیاں غیر قانونی ہیں۔ یاد رہے کہ غربِ اردن پر 1967 کی عرب اسرائیل جنگ کے دوران اسرائیل نے قبضہ کیا تھا۔

Comments
Loading...